چکوال پنجاب فوڈ اتھارٹی کا تاجروں سے بھتہ لینے کا انکشاف ، تاجر برادری نے موجودہ حکومت سے بڑا مطالبہ کر دیا

No Photo

چکوال(سواں نیوز)سابقہ دور حکومت میں پنجاب فوڈ اتھارٹی کو محکمہ قائم کیا گیا تھا جس کا بنیادی مقصد ملاوٹ اور اشیاء خوردنوش جن میں گوشت، دودھ،اور دیگر اشیاء میں کی جانے والی ملاوٹ کو کنٹرول کرنا تھا لیکن اس وقت کے کچھ ارباب اختیار نے اس پنجاب فوڈ اتھارٹی کو باقاعدہ بھتہ خوری پر لگا دیا اور ان کی لوٹ مار کا باقاعدہ حصہ ارباب اختیار کو بھی باقاعدگی سے ملنے لگا اس فوڈ اتھارٹی میں ان ارباب اختیار نے اپنے انتخابی حلقوں کے نوجوانوں کو بغیر کسی میرٹ کے بھرتی کر کے اس کا پورے پنجاب تک فوڈ اتھارٹی کو پھیلا دیا اور یہی ملازم جو اپنے آقاوں کے لئے بھتہ خوری کر تے تھے لیکن اب ان ملازمین نے اپنی جیبوں کو بھرنا شروع کر دیا اور جو کارخانہ دار یا دکاند ار انہیں بھتہ نہ دیں تو ان کی دکانوں اور کارخانوں کو بغیر کسی وجوہات کے سیل کر دیا جاتا ہے جس کی وجہ سے ان کارخانوں میں کام کرنے والے دھیاڑی دار مزدور بے روزگا ر ہو کر فاقہ کشی پر مجبور ہو جاتے ہیں پنجاب فوڈ اتھارٹی چکوال کے اہلکاروں نے چیکنگ کے نام پر پہلے تو بھتہ طلب کرنا شروع کر رکھا ہے اور جو دکاندار یا کارخانہ دار بھتہ نہ دے تواس کا تمام سامان ضائع کر نے کے ساتھ ساتھ ان دکانوں اور کارخانوں کی سیل کر دیا جاتا ہے جب کہ قانون کے مطابق پہلے اس محکمہ کو ملاوٹ شدہ مال کا تجزیہ سرکاری لیبارٹر ی سے کروانا چاہئے اور اگر یہ ا شیاء مضحر صحت ہوں تو ان کے خلاف چالان بنا کر عدالتوں کو روانہ کرنے چاہیں لیکن فوڈ اتھارٹی کے اہلکار اس قدر منہ زور ہو چکے ہیں کہ لاکھوں اور ہزاروں روپے کا ملا بغیر کسی تصدیق کے ضائع کر دیتے ہیں اور اوپر سے ان دکانداروں اور کارخانہ داروں سے ہزاروں روپے جرمانہ بھی وصول کیا جاتا ہے جب کہ بھتہ اور رشوت دینے والے کارخانوں کو ان اہلکاروں نے کھلی چھٹی دے رکھی ہے اور اگر باہر سے کوئی افسر چیکنگ کے لئے آئے تو یہی اہلکار ان کارخانہ داروں کو فون کرکے الرٹ کر دیتے ہیں اور وہ اس دورآن صفائی کے ساتھ ساتھ اپنے ملازمین کو بھی الرٹ کر دیتے ہیں تاجر برادری اور کارخانہ داروں نے موجودہ حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اس محکمہ کو فوری ختم کر کے محکمہ فوڈ اور محکمہ ہیلتھ اور بلدیاتی اداروں کو ذمہ داریا ں سونپے اس سے جہاں اس محکمہ پر اٹھنے والے کروڑوں روپے ماہانہ کے اخراجات سے سرکاری خزانے پر بوجھ کم ہو سکے گا دوسرے تاجر برادری ان کی لوٹ مار سے بھی بچ سکے گی

ٹیگز :