Advert

پاکستان تحریک انصاف میں ٹکٹ کے حصول کیلئے فیصلہ کن لابنگ شروع ہو گئی

No Photo

چکوال(نمائندہ ڈھڈیال نیوز)پاکستان تحریک انصاف میں ٹکٹ کے حصول کیلئے فیصلہ کن لابنگ شروع ہو گئی ، حلقہ پی پی21کیلئے علی ناصر بھٹی، شیخ وقار علی اور چوہدری تیمور علی خان نے ٹکٹ کیلئے درخواستیں دے رکھی ہیں جبکہ پی پی22کیلئے راجہ منور احمد، پیر وقار علی، ملک اختر شہباز اور طارق افضل کالس نے ٹکٹ کی درخواستیں دے رکھی ہیں۔ پی پی23میں پیر نثار قاسم، فوزیہ بہرام، ملک اختر شہباز، ملک کاشف حبیب کی درخواستیں اور انٹر ویو ہوچکے ہیں۔ پی پی24پر کرنل سلطان سرخرو نے درخواست دی ہے۔ حلقہ این اے65میں سردار منصور حیات ٹمن اور ملک یاسر پتوالی نے درخواستیں دے رکھی ہیں۔ سابقہ حلقہ پی پی 21جو اب موجودہ حلقہ پی پی 22ہے سے گذشتہ تین انتخابات میں پیران کرولی نے بھر پور حصہ لیا تھا 2002ء کے انتخابات میں پیر شوکت کرولی نے مسلم لیگ ن کے ٹکٹ پر الیکشن میں حصہ لیا تھا اور 114ووٹوں سے مسلم لیگ ق کے ملک تنویر اسلم سیتھی کے ہاتھوں شکست کھائی تھی ۔ 2008کے انتخابات میں پیر شوکت حسین کرولی نے آزاد پینل کے ہمراہ سردار غلام عباس کے ساتھ اس حلقے سے الیکشن میں حصہ لیا اور بھر پور ووٹ حاصل کیے ، 2013کے انتخابات میں پیر شوکت حسین کرولی نے پاکستان تحریک انصاف کے ٹکٹ پر الیکشن میں حصہ لیا مگر کامیاب نہ ہو سکے اب صورتحال تبادل کرتے ہوئے پیران کرولی کے تھنک ٹینک نے طے کیا ہے کہ پیر وقار حسین کرولی کو میدان میں اتارا جائے س بات کا امکان پیدا ہوا ہے کہ حلقہ پی پی 22سے پیر وقار حسین کرولی پی ٹی آئی کے امیدوار ہونگے پیر شوکت حسین کرولی نے 2008ء میں سردار غلام عباس کے ساتھ ملکر الیکشن لڑا تھا اور پیر شوکت حسین کرولی اور سردا رغلام عباس کے درمیان بہرن ورکنگ ریلیشن شپ موجود ہے ۔

ٹیگز :

Advert